Welcome Guest! To enable all features please try to register or login.
10 Pages«<8910
kisi b topic par likhain........
smiling-kanwal@hotmail.com Offline
#181 Posted : Tuesday, April 05, 2011 1:22:56 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 6/30/2010(UTC)
Posts: 2,876
Points: 8,760
Woman
Location: Jeddah K.S.A

Thanks: 13 times
Was thanked: 24 time(s) in 23 post(s)

imbajjo Offline
#182 Posted : Tuesday, June 14, 2011 5:45:17 AM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 10/13/2010(UTC)
Posts: 1,784
Points: 5,424
Woman
Location: kuwait

Thanks: 33 times
Was thanked: 35 time(s) in 28 post(s)
پی آئی اے
نمائندگی کرتی ہے ہمارے وطن کی بھی اور ہمارے مذہب کی بھی
گذشتہ ماہ سفر کرنے کا اتفاق ہوا۔۔۔
ازحد افسوس سے کہنا پڑرہا ہے کہ،
کھانے کے بعد جب فضائی میزبان برتن لینے آئیں تو انکے پاس بڑی پلاسٹک بیگ تھی
ہر مسافر سے نہایت خوش اخلاقی سے کہا جاتا:
" گاربیج پلیز "
اور ہماری نظروں کے سامنے
استعمال شدہ برتن اور ریپرز کے ساتھ ساتھ
باقی ماندہ خوراک بھی اس کچرے کی تھیلی میں جا رہی تھی جسے مہذب انداز میں
گاربیج بیگ کہا جاتا ہے
ہمارے دل اور ضمیر پہ خوب کچوکے لگے،
-
-
-
لیکن ہمارے سرتاج کا کہنا ہے کہ،
"تصویر کا دوسرا رُخ بھی دیکھو۔۔۔
شاید اسی طرح مسافر آئندہ کھانا بچانے سے باز رہیں"
-
-
-
میری درخواست ہے تمام قارئین سے۔۔۔
آپ مسافر ہوں یا مہمان ہوں
جہاز میں سفر کر رہی ہوں یا ٹرین میں
کسی شادی کی تقریب میں مدعو ہوں یا گھر کی ہی چھوٹی سی دعوت میں
خدارا رزق کو ضایع ہونے سے بچائیں
پلیٹ میں اتنا ہی کھانا نکالیں جتنا کھایا جا سکے
ہمارے آس پاس کتنے گھروں میں فاقے ہو رہے ہیں
اور ہم انکی ذرہ سی مدد کر کے یہ سمجھ بیٹھے ہیں کہ بس اب باقی ماندہ رزق پہ ہمارا اختیار ہے،
ہم کھائیں یا پھینکیں۔۔۔۔ ہماری مرضی
لِلہ ایسا نہ کیجئیے ، ہم سے ہر ہر نعمت کا حساب لیا جائیگا
kutegirl Offline
#183 Posted : Tuesday, June 14, 2011 8:36:00 AM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 1/6/2010(UTC)
Posts: 2,988
Points: 9,217
Location: CA

Thanks: 15 times
Was thanked: 19 time(s) in 19 post(s)

Nice sharing... bajjo...

roz e qaimat hm say iss cheez ka bhi hisaab liya jayega.........
smiling-kanwal@hotmail.com Offline
#184 Posted : Tuesday, June 14, 2011 12:59:16 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 6/30/2010(UTC)
Posts: 2,876
Points: 8,760
Woman
Location: Jeddah K.S.A

Thanks: 13 times
Was thanked: 24 time(s) in 23 post(s)
Great Sharing Bajjo
mrs.rana Offline
#185 Posted : Tuesday, June 14, 2011 2:47:50 PM(UTC)

Rank: KP Expert

Groups: Member
Joined: 6/21/2010(UTC)
Posts: 633
Points: 1,911
Woman
Location: Wah Cantt

Assalam-o-Allikum

Bajjo aap ne bilkul sahi kaha ke waqai main log rizq bohat zeeada zaaya kert heean ye soche bagher ke isi rizq se kisi ka pait bhar sakta hai.
Bajjo aap ne bohat hi important point ko ujjagar kiya hai.umeed kerte heean ke log is post ko perh ke rizq ki ahmeeat ko samjean gay.is ki qadar karean gay.nice sharing bajjo
buttercup Offline
#186 Posted : Tuesday, June 14, 2011 4:00:36 PM(UTC)

Rank: KP Expert

Groups: Member
Joined: 10/26/2010(UTC)
Posts: 633
Points: 2,009
Location: pakistan

very nice smiling zara and bajjo...God bless you
zashah Offline
#187 Posted : Thursday, June 16, 2011 2:58:59 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 12/15/2009(UTC)
Posts: 4,143
Points: 11,409
Woman
Location: france

Thanks: 1 times
Was thanked: 16 time(s) in 11 post(s)

رزق کی ناقدری کا انجام

میں بچپن سے ہی بڑی لاپروا اور ضدی تھی جو بات منہ سے نکالتی اس کو پورا کرواتی بہت فضول خرچ بھی تھی لیکن جیسے ہی بھائیوں کی شادیاں ہوئیں ہمارے گھر کے حالات آہستہ آہستہ تبدیل ہونے لگے جیسے ہمارے گھر کا رزق تنگ ہونے لگا۔ میری بھابی وغیرہ ایک ٹائم میں روٹیاں، چاول یا سالن بچ جاتا تو دوسرے ٹائم ان کو استعمال نہیں کرتی تھیں اسے ضائع کرتیں اور تازہ بنا لیتیں اور مجھے یہ حرکت بہت زیادہ تکلیف دیتی، ہمارے گھر میں شروع سے گندم‘ چاول بوریوں کے حساب سے زائد پڑے رہتے لیکن بھائیوں کی شادیوں کے بعد آٹا اور چاول کلو کے حساب سے آنے لگے۔میں نے اپنے بارے میں ذکر کیا ہے کہ میں کیسی تھی لیکن حالات نے ایسا رنگ دکھایا کہ میں سر تا پاﺅں بدل گئی پہلے میں ٹی وی، گانے اور فضول رسالوں کی شوقین تھی اللہ سے توبہ کی اور آئندہ اس گناہ سے بچنے کی دعا کی تو میرے اللہ نے سنی تو میں آٹھ سال سے اس گناہ سے محفوظ ہوں۔ میں فضول خرچی سے تب محفوظ ہوئی جب حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ کا یہ واقعہ پڑھا کہ ایک سوالی نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے پاس آیا تو اس نے آپ صلی اللہ علیہ وسلم سے اپنی حاجت کے مطابق سوال کیاتو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اس سوالی کو حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ کے پاس بھیجا جب وہ سوالی حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ کے دروازے پر پہنچا تو آپ رضی اللہ عنہ اپنی بیوی سے اس بات پر بحث کررہے تھے کہ تم نے رات کو دیئے میں بتی موٹی ڈال دی تھی جس کی وجہ سے تیل زیادہ خرچ ہوا ہے۔ سوالی یہ سوچنے لگا کہ جو آدمی اپنے گھر میں تیل زیادہ خرچ ہونے پر بحث کررہا ہے میری حاجت کیا پوری کرے گا لیکن یہ خیال آنے پر کہ مجھے نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے اس دروازے پر بھیجا ہے تو میں اس میں پوشیدہ حکمت کو دیکھتا ہوں۔ دروازے پر دستک دی تو حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ باہر تشریف لائے تو سوالی نے اپنے آنے کا مقصد بیان کیا۔ آپ رضی اللہ عنہ اندر گئے اورسکوں سے بھری ایک تھیلی لاکر اس سوالی کو دی جسے و دیکھ کر وہ سوالی حیران ہوا اور جو بحث اس نے دروازے پر کھڑے ہو کر سنی تھی وہ بیان کی اور کہا کہ اب مجھے آپ رضی اللہ عنہ اتنا دے رہے ہیں کہ میری پوری نسل بھی کھائے تو ختم نہ ہو تو حضرت عثمان غنی رضی اللہ عنہ کے جواب نے میری فضول خرچی کی عادت کو جڑوں سے ختم کر دیا انہوں نے جواب دیا کہ جو گھر میں بحث ہو رہی تھی وہ اپنی ذات پر خرچ تھا اور یہ اللہ رب العزت کی راہ میں خرچ ہے اپنی ذات پر خرچ کرنے کا حساب دینا ہے اور اس کی راہ میں خرچ کیے ہوئے مال کا اس سے دنیا و آخرت میں اجر لینا ہے۔ اب تو میری ایسی عادت ہو گئی ہے کہ گرمیوں میں گرم کپڑے اور بند جوتے استعمال کرنے پڑے تو مجھے محسوس نہیں ہوتا، کھانا مجھے تین دن کا باسی بھی ملے تو میں اسے اتنے ہی شوق سے اور مزے سے کھاتی ہوں جتنا تازہ اور لذیذ۔

(عظمیٰ تاج)




redsn Offline
#188 Posted : Friday, June 17, 2011 2:07:17 AM(UTC)

Rank: KP Foodie

Groups: Member
Joined: 4/5/2011(UTC)
Posts: 168
Points: 504
Woman
Location: world

Very very nice sharing Zara and bajjo, thank you so much.

sara_raz657 Offline
#189 Posted : Friday, June 17, 2011 12:29:24 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 1/4/2010(UTC)
Posts: 1,452
Points: 4,307
Woman
Location: islamabad

Was thanked: 9 time(s) in 8 post(s)
Nice sharing everyone
zashah Offline
#190 Posted : Friday, July 08, 2011 2:28:33 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 12/15/2009(UTC)
Posts: 4,143
Points: 11,409
Woman
Location: france

Thanks: 1 times
Was thanked: 16 time(s) in 11 post(s)
خوش رہیے ‘دوسروں کو بھی خوش رکھئے
ہمیشہ سے دنیا کی یہ ریت ہے کہ اس نے ہنستے مسکراتے انسانوں کو بڑی خوش دلی سے قبول کیا ہے اور روتے دھوتے‘ منہ بسورتے‘ غم زدہ اور مایوس افراد کو یکسر نظر انداز کیا ہے۔موجودہ حالات میں خوشیاں مفقود ہیں اور غم و الم منہ کھولے کھڑے ہیں۔
مشہور قول ہے کہ ”دنیا خوش رہنے والے کے ساتھ خوش رہتی ہے اور رونے والے کو تنہا چھوڑ دیتی ہے۔“
ایک تجارتی ادارے کے دفتر میں لوگ سرگوشی کررہے تھے: ”رشید صاحب کو آج پھر ڈپریشن کا دورہ پڑا ہے۔ آخر کب تک یہ ہوتا رہے گا۔ اس طرح ہماری کمپنی کا تو دیوالیہ نکل جائے گا۔ انہیں جلد اس کمپنی سے فارغ کرکے کسی معقول شخص کا انتظام کرنا چاہیے۔“
”امی! آپ بھائی جان کی بیماری کا رونا کب تک روتی رہیں گی؟ کب تک ہم لوگ ان کے گھٹنوں سے لگے رہیں گے؟ ہم تو زندگی سے بیزار ہوگئے۔ اب ہم سے یہ اذیت‘ شکایت‘ مشکلات برداشت نہیں ہوتیں۔ آخر ہمیں بھی زندہ رہنے کا حق ہے۔ ہماری بھی کچھ خواہشات‘ تمنائیں‘ آرزوئیں ہیں۔ آخر ہم اس کی تکمیل کب کریں اور کب تک اپنی خواہشات کا گلا گھوٹتے رہیں؟“ فراز نے زور سے دروازہ کھولا اور باہر کی راہ لی۔
”ارے دیکھو! ساجدہ باجی کا آج بھی موڈ آف ہے۔ ان کو تو یہیں رہنے دو۔ سارا مزا کرکرا کرکے رکھ دیا۔ چلو ہم سب پکنک پر چلتے ہیں۔ ایک بے جان چیز کو آخر ہم کب تک گھسیٹتے رہیں گے۔ چھوڑو ان کو ورنہ ہماری ساری پکنک کا بیڑا غرق ہوجائے گا۔” رفیعہ نے منہ بسورتے ہوئے کہا۔
اس قسم کے واقعات اکثر و بیشتر زندگی میں رونما ہوتے رہتے ہیں۔ واقعی یہ درست ہے کہ ایک افسردہ دل انسان کا سایہ بھی اس کا ساتھ چھوڑ دیتا ہے۔ ہر چیز کی ایک انتہا ہوتی ہے۔ آخر کب تک انسان غموں‘ الجھنوں‘ پریشانیوں‘ اذیتوں اور تکلیفوں میں گھرا رہے گا۔ انسان کی زندگی میں ایک ایسا لمحہ بھی آتا ہے جب انسان اس جمود اور خول کو توڑ کر خوشیوں‘ راحتوں‘ شادمانیوں کی تلاش میں سرگرداں ہوجاتا ہے۔
یہ بات حقائق پر مبنی ہے کہ انسان یکسانیت سے گھبرا جاتا ہے اور زندگی میں تبدیلیاں چاہتا ہے‘ وہ غموں‘ اذیتوں‘ تکلیفوں کے بندھن کو توڑ کر راحتوں‘ خوشیوں کے سفر پر نکلنا چاہتا ہے‘ چاہے وہ تبدیلیاں چند لمحات کی ہوں یا چند دن کی۔ ہر شخص زندگی میں خوشگوار تبدیلی کیلئے پرفضا مقام پر یا بہت پرآسائش جگہ جانا چاہتا ہے بلکہ لوگوں کے درمیان صرف بے تکلف گپ شپ اور ہنسی مذاق سے بھی فضا بدل سکتی ہے اور انسانی ذہن میں خوشگوار تبدیلی رونما ہوسکتی ہے۔ اپنی باتوں یا گفتگو میں ظرافت کو شامل کرلیا جائے تو خاطر خواہ خوشگوار تبدیلیاں نمایاں طور پر محسوس کی جاسکتی ہیں۔کوئی دلچسپ مشغلہ اپنا کر بھی زندگی سے لطف اندوز ہوا جاسکتا ہے۔
ہمیشہ سے دنیا کی یہ ریت دلچسپ ہے کہ اس نے ہنستے مسکراتے انسانوں کو بڑی خوش دلی سے قبول کیا ہے اور روتے دھوتے‘ منہ بسورتے‘ غم زدہ اور مایوس افراد کو یکسر نظر انداز کیا ہے۔
نفسانفسی کے اس دور میں خوشی‘ مسرت‘ راحت‘شادمانی کے چند لمحات بھی حاصل ہوجائیں تو اس سے بڑھ کر خوش نصیبی کیا ہوسکتی ہے۔ موجودہ حالات میں خوشیاں مفقود ہیں اور غم و الم منہ کھولے کھڑے ہیں۔ انسان غم و اذیت کے چنگل میں اس قدر پھنس گیا ہے کہ ان سے بچنا مشکل معلوم ہوتا ہے۔ وہ فرار کی راہیں اختیار کرنا چاہتا ہے اور چھوٹی چھوٹی خوشیاں سمیٹنا چاہتا ہے۔
عقل سلیم رکھنے والے انسان کیلئے ہنسنا ایک فطری عمل ہے۔ کسی انسان کے چہرے پر تبسم کی لہر اس وقت نمودار ہوتی ہے جب وہ عام روش کے خلاف کسی غیرمعمولی چیز کو دیکھتا ہے جیسے کسی شخص کا انداز بے ڈول ہویا سڑک پر ایسے شخص کا گزر ہو جیسے وہ کسی کارٹوں کا نمونہ ہو۔ اس نے سبزپاجامہ‘ پیلی قمیض اور نیلی ٹوپی زیب تن کررکھی ہو تو اسے دیکھتے ہی ایک عجوبے کا تصور آنکھوں میں ابھرتا ہے اور یوں ہونٹوں پر تبسم کی لہر دوڑ جاتی ہے۔
جو لوگ مسکراتے نہیں درحقیقت وہ بیمار ہوتے ہیں اور وہ وقت سے پہلے بوڑھے ہوجاتے ہیں۔ دراصل لوگ خود کو دنیا کی خوبصورتی‘ رعنائی‘ دل فریبی اور شادابی سے دور رکھتے ہیں۔ ایک صحت مند شخص کا ذہن کھلے انداز میں ہنسنے اور مسکرانے کی خواہش محسوس کرسکتا ہے۔ اس کیلئے ضروری ہے کہ ہم میں اپنی غلطیوں پر ہنسنے کی صلاحیت بھی ہو۔
دراصل اپنے آپ پر ہنسنا اپنی غلطیوں سے لطف اندوز ہونا بھی ایک فن کی حیثیت رکھتا ہے۔ جو افراد دوسرے لوگوں کو خوش رکھتے ہیں وہ دراصل روح اور دل دونوں کو جلا بخشتے ہیں اور لوگ ان کی صحبت سے لطف اندوز بھی خوب ہوتے ہیں۔
یہ بات طبی اعتبار سے بھی ثابت ہے کہ بہت سی بیماریاں اور پریشانیاں‘ غمگین جذبات اور افسردگی کا نتیجہ ہوتی ہیں اور آدھی سے زیادہ بیماریاں ہنسنے‘ مسکرانے کی وجہ سے بہ آسانی رفع ہوجاتی ہیں۔
مسکرانے سے بیماری میں مبتلا فرد بھی خود کو بہت ہلکا پھلکا‘ پرسکون اور مطمئن محسوس کرتا ہے۔ خوش مزاجی سے اس کی آدھی پریشانیاں اور غم دورہوجاتے ہیں۔
نفسیاتی اعتبار سے ہنسنا آسان اور سہل عمل ہے۔ یہ انسانی جسم میں دوران خون کو بڑھاتا ہے۔ ذہنی دباوکو کم کرتا ہے۔ اس سے تھکن یکسر غائب ہوجاتی ہے‘ منفی سوچیں اور تفکرات رفع ہوجاتے ہیں۔ اس طرح اس میں مسائل حل کرنے کی ایک نئی لگن‘ تازگی حوصلہ اور جستجو پیدا ہوجاتی ہے۔
خوش دلی بہترین علاج غم ہے۔ یہ کئی دواوں سے بہتر دوا ہے۔ کئی قیمتی ٹانکوں سے زیادہ توانائی بخش ٹانک ہے۔ اس کے ذریعے سے دنیا اور زندگی خوبصورت‘ دل فریب اور حسین بن جاتی ہے۔ ایسا شخص دراصل زندہ رہنا چاہتا ہے۔ وہ زندگی کو مثبت طرز فکر سے دیکھتا ہے اور آنے والی تمام رکاوٹوں اور مصائب کو ہنس کھیل کر دور کردیتا ہے۔
کسی دانشور کا یہ قول درست ہے کہ ”انسان کو کام کی زیادتی نہیں مارتی بلکہ تفکرات مارتے ہیں“ اس کا علاج یہی ہے کہ ہم سب مل کرخوش رہیںاور خوب خوش مزاج بنیں“ کیونکہ اس طرح غموں کے بادل چھٹ جاتے ہیں۔
imbajjo Offline
#191 Posted : Sunday, May 06, 2012 10:31:52 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 10/13/2010(UTC)
Posts: 1,784
Points: 5,424
Woman
Location: kuwait

Thanks: 33 times
Was thanked: 35 time(s) in 28 post(s)

 

السّلام علیکم

  ..آج میں

 forwarded mesages

پر کچھ لکھنا چاہتی ہوں پاکستان میں یہ  میسج پیکج ہر نیٹ ورک میں سب کے پاس موجود ہےجس کی وجہ سے فارورڈڈ میسجز نہ صرف سب رشتےداروں کو , احباب کو آپس میں 'اِن ٹچ' رکھنے کا سبب ہیں وہیں اسکا دوسرا رخ قابلِ اصلاح ہے .. مذاق اچھا ہوتا ہے اگر تہذیب کے دائرے میں ہو, اچھی بات ہے کہ آپ ، سبکو مسکراہٹ بانٹیں .. لیکن یہ احتیاط بھی تو لازمی ہے کہ پہلے اُسے [اس فارورڈڈ میسج کو ]  معیار اور اخلاق کی کسوٹی پر ناپ تول کے دیکھیں پھر فارورڈ کریں

.پورے پاکستان کے ہی حالات خراب ہیں, خون خرابا

..

 مرنے والے انسان ہی ہیں نا ۔۔ کسی کے لختِ جگر ، کسی کے والدین ، کسی کے شریکِ حیات ، کسی کے بہن بھائی ۔۔۔ اُنکو یوں لطیفوں میں شامل کرنا اچھا ہے ؟ لیاری میں کتنے جنازے اُٹھ رہے ہیں .. ! سب نے خبریں سُنیں اور دیکھیں ۔۔ لیکن کسی میّت کو لطیفے میں ذکر کرنا بھلے وہ مرنے والا مکرانی ہی ہو ..[بھلے فرضی نام ہو] یہ کہاں کی انسانیت ہے ؟

..

مجھے نہیں خبر ۔۔ کہاں سے شروع ہوتی ہے یہ میسجز کی چین .. کون نا اھل ذہن یہ میسجز بناتے ہیں ؟ اور سلسلہ شروع کرتے ہیں 

اُنکی تعلیم  اور تہذیب کی تو نہیں خبر ۔۔ لیکن کم از کم  ہم  کسی میسج کو فارورڈ کرنے سے پہلے اپنی تعلیم اور تہذیب کا تو خیال کریں ۔۔ 

۔۔۔

 !الله کا خوف کرو مسلمان بہن بھائیو

imbajjo Offline
#192 Posted : Thursday, May 17, 2012 10:41:23 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 10/13/2010(UTC)
Posts: 1,784
Points: 5,424
Woman
Location: kuwait

Thanks: 33 times
Was thanked: 35 time(s) in 28 post(s)

 

وصیّت نامہ : - اللہ تعالیٰ ہمیں توفیق عطا فرمائے ہم اپنی ذمہ داریوں اور فرائض کو سمجھیں وصیّت کرنا فرض ہے ۔۔ بالخصوص اسوقت، کہ جب کوئی دنیاوی مال و اسباب ہو .. نیز امانتوں اور قرضوں کا حساب رکھنا اور اسکے لئیے وصیّت تیّار رکھنا ضروری ہے ۔ نماز اور روزوں کا فِدیہ، حجِ بدل ، ادائیگئ مہراور زکوٰة  کی ادائیگی کے لئیے وصیّت کرنا ضروری ہے ۔ اسی طرح اولاد و اعزّا کو پابندئ شرع کی وصیّت کرنا چاہئیے ۔

-

دنیا سے ہمارے رخصت ہونے کا وقت صرف اللہ تعالیٰ کے علم میں ہےکسی لمحہ بھی یہ گھڑی آسکتی ہے، اسلئیے ضروری ہے کہ وصیت نامہ تیار رکھا جائے

۔۔۔

[ماخوذ، کتاب وصیت نامہ]

 

Mohammad Anwar Offline
#193 Posted : Wednesday, June 06, 2012 12:10:27 PM(UTC)

Rank: KP Prince

Groups: Member
Joined: 5/6/2009(UTC)
Posts: 3,619
Points: 8,273
Man
Location: Karachi, Pakistan

Was thanked: 1 time(s) in 1 post(s)

PLEASE CIRCULATE THIS NOTICE TO YOUR FRIENDS AND FAMILY ON YOUR CONTACT LIST.

In the coming days, you should be aware…
Do not open any message with an attachment called:"Invitation FACEBOOK", regardless of who sent it. It is a virus that opens an Olympic torch that burns the whole hard disc C of your computer. This virus will be received from someone you had in your address book.
That's why you should send this message to all your contacts. It is better to receive this email 25 times than to receive the virus and open it.If you receive E-MAIL called: "Invitation FACEBOOK", though sent by a friend, do not open it and delete it immediately. CNN said it is a new virus discovered recently and that has been classified by Microsoft as the most destructive virus ever. It is a Trojan Horse that asks you to install an adobe flash plug-in. Once you install it, it's all over. And there is no repair yet for this kind of virus. This virus simply destroys the Zero Sector of the Hard Disc, where the vital information of their function is saved!!


imbajjo Offline
#194 Posted : Friday, September 14, 2012 2:52:00 AM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 10/13/2010(UTC)
Posts: 1,784
Points: 5,424
Woman
Location: kuwait

Thanks: 33 times
Was thanked: 35 time(s) in 28 post(s)

 

.

"کسی بھی ٹاپک پہ لکھیں"

یہ ٹاپک تو نہیں ، بہت بڑا حادثہ ہے ۔۔ جس پہ دل کِرچی کِرچی ہے

لیکن سمجھ نہیں آیا کہ دل کا غبار اس فورَم کے کس ٹاپک پہ نکالوں ؟ تو اسی کا انتخاب کیا

http://www.bbc.co.uk/urd...e_family_storiy_ha.shtml

اللہ رحم فرما ۔۔ ان سبکی مغفرت فرما

انکے  لواحقین کو صبر عطا فرما اور صبر کا بہترین اجر عطا فرما

آمین

۔۔۔

چھ ہزار روپے مہینہ ، آٹھ ہزار روپے مہینہ ۔۔۔!!!! کوئی غربت سی غربت ہے

کبھی ہم نے موازنہ کِیا ہے اپنے اور انکے طرزِ زندگی کا ؟ ہم تو بس اپنے سے اوپر دیکھنے کے عادی ہیں ، اسی دوڑ میں لگے ہوئے ہیں

شُکر کے بجائے  ناشکری نے ہمارے دِلوں میں گھر کرلیا ہے۔

کیا آج ان گھروں میں چولھا جلا ہوگا؟ اب ایک تنخواہ کا سلسلہ رُکنے پر ، گھر کا کونسا اگلا فرد روزی روٹی کے لئے میدان میں اترے گا؟

اُسکو کتنی تنخواہ پہ نوکری ملے گی؟

اور کہاں ملےگی؟

ہم میں سے کتنے ان خاندانوں کو ذاتی طور پہ جانتے ہیں؟

ہمارے پاس کیا ہے انکو دینے کے لئے؟

==

imbajjo Offline
#195 Posted : Tuesday, October 16, 2012 11:44:06 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 10/13/2010(UTC)
Posts: 1,784
Points: 5,424
Woman
Location: kuwait

Thanks: 33 times
Was thanked: 35 time(s) in 28 post(s)
imbajjo Offline
#196 Posted : Saturday, January 11, 2014 6:49:22 PM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 10/13/2010(UTC)
Posts: 1,784
Points: 5,424
Woman
Location: kuwait

Thanks: 33 times
Was thanked: 35 time(s) in 28 post(s)
Umm.e.maryam Offline
#197 Posted : Thursday, June 12, 2014 3:42:53 PM(UTC)

Rank: KP Foodie

Groups: Member
Joined: 7/17/2012(UTC)
Posts: 189
Points: 585
Woman
Location: Jeddah,, K.S.A

جزاکاللہ خیرا
Hijaab is our rightful culture
And if nakedness is civilization!!!!
Then animals are more civilized!!!!!!
KP Admin Offline
#198 Posted : Friday, June 13, 2014 8:36:19 PM(UTC)

Rank: Administration

Groups: Administration
Joined: 6/5/2008(UTC)
Posts: 1,329
Points: 647

Thanks: 40 times
Was thanked: 26 time(s) in 10 post(s)

MashaAllah Very Nice. I just read this one. Unfortunately we see dance competition, singing in so called "religious" gatherings. May Allah SWT allow us to understand the value of being a Muslim. 

 

Ameen

imbajjo Offline
#199 Posted : Sunday, July 19, 2015 12:55:04 AM(UTC)

Rank: KP Princess

Groups: Member
Joined: 10/13/2010(UTC)
Posts: 1,784
Points: 5,424
Woman
Location: kuwait

Thanks: 33 times
Was thanked: 35 time(s) in 28 post(s)
as.salam o alaikum
sub ko Eid Mubarak
Chalakoo Offline
#200 Posted : Thursday, October 29, 2015 8:53:12 AM(UTC)

Rank: KP Queen

Groups: Member, Moderators
Joined: 1/8/2009(UTC)
Posts: 5,179
Points: 12,870
Location: Canada

Was thanked: 8 time(s) in 7 post(s)

Hopefully I m back


Quick Reply Show Quick Reply
Users browsing this topic
10 Pages«<8910
Forum Jump  
You cannot post new topics in this forum.
You cannot reply to topics in this forum.
You cannot delete your posts in this forum.
You cannot edit your posts in this forum.
You cannot create polls in this forum.
You cannot vote in polls in this forum.